Advertisements
Free Business Listing
مقبوضہ کشمیر : سید علی گیلانی کا کشمیریوں کی حمایت پر پاکستان  کا شکریہ ،بھارتی قبضے کے خلاف جدوجہد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ 629

مقبوضہ کشمیرمیں دس ہزار کے قریب بھارتی فوجیوں کی تعیناتی کی شدید مذمت: انسانی حقوق کی پامالیوں بارے عالمی سطح پراظہار تشویش سے بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہوگیا ہے ۔سید علی گیلانی

(سرینگر30جولائی (کے ایم ایس)
مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس نے بھارت کی طرف سے ہنگامی بنیادوں پر مقبوضہ علاقے میں مزید دس ہزار کے قریب بھارتی فوجی تعینات کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ اس اقدام سے دنیا کو اس بات کا اندازہ ہوجانا چاہیے کہ بھارت کس طرح اپنی پوری قوت کشمیریوں کی حق پر مبنی جدوجہد آزادی کو کچلنے کے لیے استعمال کررہا ہے۔

کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ یہ جموںوکشمیرمیں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے بارے میں عالمی سطح پر ظاہر کی جانیوالی تشویش کا جواب ہے .

جس نے بھارت کوسفارتی سطح پر شدید زک پہنچائی ہے اور وہ بوکھلاہٹ میں جنگ جیسی صورتحال پیدا کررہا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ لاکھوں بھارتی فوجیوں کی کشمیر میں موجودگی کے باوجود مزید سو کمپنیوں کی کشمیر میں تعیناتی اور مزید سو کو تیار رہنے کے احکامات جاری رکھنے کا واحد مقصد کشمیریوںکی جائز تحریک آزادی کو دبانے کیلئے انہیں مزید ہراساںاورخوفزدہ کرنا ہے۔ ترجمان نے بھارتی فوج کے سربراہ کے کشمیر بارے حالیہ بیان کہ ”کشمیر زیادہ دیر تک بین الاقوامی مسئلہ نہیں رہے گا“ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ انکا یہ کہنا دراصل مسئلہ کشمیر کی بین الاقوامی حیثیت کو تسلیم کرنا ہے جس سے یہ لوگ بار بار انکار کرتے آرہے تھے۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کو چاہیے کہ وہ فوجی طاقت سے اس مسئلے کو دبانے کی بجائے عالمی سطح پر اس دیرینہ تنازعے کے حل کیلئے اٹھنے والی آوازوں کو سنیں اور جنگی جنون ماحول پیدا کرنے کی بجائے جنوبی ایشیاءمیں پائیدار من و سلامتی کے قیام کے لئے سنجیدہ کوششیں کریں۔

حریت ترجمان نے کہاکہ بھارت طویل عرصے سے مسئلہ کشمیر کو دبانے کیلئے اپنی پوری قوت اور تمام تر ہتھکنڈے استعمال کر چکا ہے تاہم وہ کشمیریوں کی جائز خواہشات اور نہ ہی اس مسئلہ کے حل کےلئے اٹھنے والی آوازوں کو دبا سکا۔ انہوںنے چین کی طرف سے امریکی صدر کی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ثالثی کی پیشکش کا خیرمقدم کرنا خطے میں امن وسلامتی کے لیے خوش آئند قرار دیا۔ انہوں نے اس ظلم وبربریت کے دور میں کشمیری عوام سے اپیل کی کہ وہ اللہ تعالیٰ سے رجوع کرتے ہوئے قرآن کو پڑھیں، سمجھیں اور اس پر عمل پیرا ہوکر اپنے اعمال کو درست کریں، نفاق، جھوٹ، خیانت، بے حیائی اور دیگر اخلاقی بیماریوں کا علاج اسی قرآن میں تلاش کریں اور خصوصی دُعاو ¿ں کا اہتمام کریں، تاکہ اللہ تعالیٰ اپنی رحمت سے ہمارے مصائب آسان فرماکر دنیا وآخرت کی سرخروئی سے نوازے۔
ادھر حریت چیئرمین سیدعلی گیلانی کی ہدایت پر حریت ترجمان حکیم عبدالرشید نے بٹہ مالو میں محمد الطاف بابا کے غائبانہ نماز جنازہ میں شرکت کی جن کاگزشتہ روز مظفر آباد میں حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے انتقال ہوگیا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں