Advertisements
Radicals will stop imperialist occupation of Kashmir through feudal factions - Mushtaq Chaudhry, Sabir Ali Haider 96

بنیاد پرست فسطائی حواریوں کے ذریعے سامراج کا کشمیر پر قبضہ ہر صورت روکیں گے – مشتاق چودھری, صابر علی حیدر

 

( لاہور جموں کشمیر نیوز ٹاکس)

فسطائی نریندر مودی کی سرکار کا آرٹیکل 370 اور 35 اے ختم کرنا, وادی میں مسلح دستے اتارنا, کرفیو نافذ کرنا اور قتل و غارتگری کرنا اور قصائی مودی کا ترقی کی راہیں کھولنے کے وعدے کرنے کا صرف ایک مطلب ہے اور وہ یہ کہ مودی سرکار سامراج کو کشمیری عوام کے بنیادی حقوق کے بر خلاف خطہء کشمیر کو سامراج کے ہاتھوں فروخت کر چکی ہے.
یہ کہنا تھا مشتاق چودھری اور صابر علی حیدر  کا جو آج پیپلز ڈیموکریٹک فرنٹ پاکستان کی مرکزی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔

پیپلز ڈیموکریٹک فرنٹ پاکستان نے آج باضابطہ اعلان کیا کہ کشمیر ایشو پر وہ پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیری حصے میں مکمل طور پر ترقی پسند اتحاد پیپلز نیشنل الائنس (PNA) کے شانہ بشانہ کھڑے رہیں گے. انہیں اتحاد کے چیئرمین راجہ ذوالفقار احمد, جنرل سیکرٹری لیاقت حیات, سردار انور, صغیر احمد ایڈووکیٹ, یاسر یونس, سردار طلحہ, احسن اسحاق اور دیگر قائدین پر مکمل اعتماد ہے. ہم جے کے پی این پی, جے کے نیپ, جے کے این ایس ایف, جے کے ایس ایل ایف, جے کے ایل ایف اور سوراجیا انقلابی پارٹی کی حکمت عملی سے بھی واقف ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارا خمیر این ایس ایف پاکستان سے اٹھا ہے اور این ایس ایف پاکستان ماضی میں بھی بین الاقوامی ایشوز پر اپنا سائینسی موقف رکھتی تھی. جبل پور کے شہداء کے خلاف این ایس ایف ہی نے تحریک چلائی. کانگو میں پیٹرس لوممبا قتل ہوئے تو این ایس ایف سڑکوں پر تھی, تو آج جب سامراج کی خوشنودی کے لئیے کشمیر میں قتلِ عام جاری ہے تو ہم خاموش کس طرح رہ سکتے ہیں؟
کشمیر کبھی حافظ سعیدوں, ذکی الرحمان لکھویوں اور مسعود اظہروں کی ذد میں ہوتا ہے تو کبھی آر ایس ایس کے فسطائی ریاستی غنڈے ان کا قتل کرتے ہیں.۔
ہم سائینسی بنیادوں پر سوچتے ہیں اور مظلوموں کے نام پر جھوٹی ہمدردی جتانے کے قائل نہیں. ہم کشمیر پر مسلط دونوں ریاستوں سے کہتے ہیں کہ ریاست ہائے جموں و کشمیر, لداخ, گلگت اور بلتستان کے 86806 مربع کلو میٹر پر مشتمل علاقے کا فیصلہ کرنے کا حق صرف اور صرف کشمیری عوام کا ہے۔

دونوں طرف کے بنیاد پرست فسطائی طبقات کو من مانی نہیں کرنے دیں گے اور اس جدوجہد میں کشمیر کی خودمختاری سے لے کر وہاں پر عوامی جمہوری انقلاب کی کامیابی تک پیپلز نیشنل الائنس کے ساتھ کھڑے رہیں گے. کشمیری نچلی سطح تک عوام کو مضبوط کریں گے اور سامراج کو شکست دیں گے. مگر یہ نوشتہء دیوار مقتدر طاقتوں کو نظر نہیں آ رہا۔

اجلاس میں صابر علی حیدر کی سربراہی میں کشمیر کوآرڈینیشن کمیٹی قائم کرنے کا اعلان کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں