Advertisements
Free Business Listing
The efforts on the Kashmir issue are complimentary to the European Parliament, calling the Modi government's actions unacceptable. 156

مسلہ کشمیر پر اراکین یورپین پارلیمنٹ کی کوشیشیں قابل تحسین ہیں، مودی حکومت کے اقدامات کو ناقابل قبول قرار دیدیا۔

برسلز۔

یورپین پارلیمنٹ کے اجلاس میں مسلہ کشمیر پر بحث  مودی حکومت کے اقدامات کو ناقابل قبول قرار دیدیا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق  اس بات پر ممبران پارلیمنٹ فل بینین، ٹرائین باسکو، نوشینہ مبارک، ماریا ایرینا، اینھیا مکن ٹائئر ، کرس ڈیوس، آدیناولانیوا، رونیرا نے بحث کی۔ پورپین پارلیمنٹ کے ممبران کی کشمیریوں کے حق میں آواز اٹھانے پر جتنی تعریف کی جائے کم ہے  قرارداد میں موقف کو واضح کرتے ہوئے مسلہ کشمیر کی موجودہ صورتحال کو سنگین قرار دیتے ہوئے مودی سرکار کے اقدامات کو ناقابل قبول قرار دیدیا۔

یورپ میں رہنے والے وہ تمام کشمیری لوگ قابل تعریف ہیں جن کے مسلسل اور موثر احتجاجی مطاہروں نے پوریپین پارلیمنٹ کو اس سنگین صورتحال پر متوجہ کروایا ۔ خیال رہے 5 اگست سےمودی کے غیر آئینی غیر جہموری اقدامات کے بعد عوامی بغاوت کے خوف سے مودی حکومت نے کرفیو نافذ کر رکھا ہے کرفیو کو نافذ ہوئے 48 دن گزر چکے ہیں لوگ اپنے گھروں میں قید ہیں عالمی میڈیا رپورٹس کے مطابق مرنے والے لوگوں کو اب گھروں میں ہی دفنایا جارہا ہے لوگوں کے گھر جیل کے ساتھ ساتھ قبرستان میں تبدیل ہو چکے ہیں کھانے پینے کی ایشیا تک میسر نہیں ۔ ہزاروں کی تعداد میں سیاسی کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا ہے سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں کو شہید کر دیا گیا ہے ۔یورپی پارلیمنٹ میں کشمیریوں کے حق میں اٹھنے والی آواز کو کشمیری قیادت نے خوش آئند قرار دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کے دنیا میں بسنے والے بااصول باضمیر لوگ مودی کے اس غیر انسانی رویے کی مخالفت کرتے ہوئے مظلوم کشمیریوں کے حق میں اپنی آواز اٹھائیں گے اس وقت پوری دنیا میں کشمیری سراپا احتجاج ہیں ان کا ایک ہی مطالبہ ہے کے ہمارا قتل عام بند کرو ہمیں جینے کا حق دو ہمیں زندہ رہنے دو ، ۔ کشمیری قیادت نے یورپی پارلیمنٹیرین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کے ہمیں امید ہے کے پورپ میں کشمیریوں کی آواز کو بلند کیا جائے گا 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں