Advertisements
Jammu Kashmir Liberation Front Switzerland calls on UN to send peace troops to Jammu and Kashmir. 160

جموں کشمیر لبریشن فرنٹ سوئسزرلینڈ نے اقوام متحدہ سے جموں کشمیر میں امن فوج بھجنے کا مطالبہ کر دیا۔

جنیوا ۔

اقوام متحدہ ریاست جموں کشمیر اس کے شہریوں کے تحفظ کا ضامن ھے۔ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کوجنیوا میں انسان حقوق کی کونسل کے صدر کے ذریعے اپیل کر دی گئ۔ تفصیلات کے ُمطا بق جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کا وفد شاید خان اور سردار طائر صدیق کی قیادت میں اقوام متحدہ کے نمائندے سے معلوقات کر کے چار صفات پر مشتمل تحریری خط پیش کیا اور بریفنگ کے بعد فورا” سکریٹری جنرل کو بھج دی گئ۔

اس خط میں جموں کشمیر میں جاری آزادی کی تحریک اور ریاست میں بڑے پیمانے پر ھونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ذکر کیا گیاھے۔خصوصا” ۵ اگست کے بعدبھارت کے زیرے انتظام جمو ں ،کشمیر ،لداخ اور کرگل میں بھارت کی افواج کی جانب سے محاصرہ اور بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ذکر کیا گیا ھے۔ اس کے علاوہ پاکستان کے زیرے انتظام جموں کشمیر گلگت بلتستان کی عوام کے ریاست کو متحد کرنے کی عوامی سیاسی اور پر امن جدوجہد کا ذکر کیا گیا ھے اور خصوصا” چار اکتوبر کو آزادی پسندوں کے آزادی مارچ کے دوران کی صورت حال پر نظر رکھنے کے لیے اقوام متحدہ کے مبصر کو متحرک رکھنے کی اپیل کئی۔اس خط میں جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیرمین یاسین ملک جو ھندوستان کی تہاڑ جہل میں ھیں ان کی خرابی صحت کا ذکر کرتے ھوے مطالبہ کیا گیا ھے کہ ان کو رھا کریا جاے۔

اس کے علاوہ ریاست جموں کے تمام حصوں میں سارے سیاسی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا گیا ھے۔سکر ٹری جنرل سے اپیل کی گئ کہ وہ آرٹیکل ۹۱ اور ۹۹ کے مطابق فورا” جموں کشمیر میں امن فوج کو داخل کرنے کا ائتمام کریں، تاکہ ریاست جموں کشمیر اور اس میں رھنےوالے انسانوں کی زندگیوں کو بچایا جا سکے۔ یاد رھے کہ اسی روز جموں کشمیر لبریشن فرنٹ سوئٹزرلینڈ نے جنیوا میں انسانی حقوق کی کونسل کے سامنے ایک مظاہرہ بھی کیا جو دو گھنٹے جاری رھا۔ جس میں یورپ کے دیگر ممالک سے جموں کشمیر لبریشن کے عہدہ دران ذمہ داران اور کارکنان نے شرکت کی۔وہ لوگ جنہوں نے اس موقع پر تقریر کی اور شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں