Advertisements
what-is-happening-in-kashmir-is-very-shameful-the-intellectuals-have-to-raise-their-voice-in-favor-of-kashmiris-arun-dutti-rai 152

کشمیر میں جو کچھ ہو رہا ہے انتہائی شرمناک ہے ، دانشور طبقے کو کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کرنا ہو گی :ارون دھتی رائے ۔

جالندھر ۔

ممتاز بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے نے مقبوضہ کشمیر کی موجودہ ابتر  صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بھارتی دانشور، با اصول اور انسان دوست طبقے پر زور دیا کے وہ کشمیر کے حوالے سے اپنی آواز بلند کریں ۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ارون دھتی رائے نے بھارتی پنجاب کے شہر جالندھر میں منقعدہ ایک میلے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کے کشمیر مین جو کچھ ہو رہا ہے انتہائی شرمناک ہے  انہوں نے کہا کے کشمیر کے حالات دیکھ کر وہ میرا بھارت مہان کہنے سے قاصر ہے ۔

کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین پامالی کی جا رہی ہے کشمیریوں کے ساتھ غیر انسانی فعل انتہائی شرمناک عمل ہے انہیں اپنے مستقبل کے فیصلے کا حق دیا جانا چاہیے بھارت میں جتنے انسان دوست رہتے ہیں ان پہ زمہ داری عائد ہوتی ہے کے وہ کشمیر کے حق میں آواز بلند کریں۔ 

کشمیر میں جسطرح ظلم کے پہاڑ ڈھائے جا رہے ہیں ان کی بھرپور مخالفت کریں ظلم جبر کی  کسی صورت حمایت نہیں کی جا سکتی۔

انسان دوست انسانیت سے محبت کرتے ہیں اور دنیا بھر میں ہونے والے مظالم کی مخالفت کیا کرتے ہیں لہذا بھارت میں بسنے والے انسان دوستوں پہ بڑی زمہ داری عائد ہوتی ہے کے وہ مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کریں ۔

انہوں نے کہا کے بہت کم صحافیوں نے کشمیر کے حالات کی درست ترجمانی کی ، صحافیوں کا کام ہوتا ہے کے وہ اصل حقائق کو عوام تک لائیں ظلم پر پردہ ڈالنے والے بھی ظالم ہوتے ہیں اور ظلم کے خلاف آواز بلند کرنے والے انسان دوست ہوا کرتے ہیں لہذا ہم نے تہہ کرنا ہو گا کے ہم ظالم کے ساتھی ہیں یا انسان دوست ہیں بھارت کو ایک نئی تحریک اور نئے میڈیا کئ ضرورت ہے 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں