Advertisements
Free Business Listing
declaration-of-all-parties-conference-of-jammu-and-kashmir-peoples-national-alliance 34

جموں کشمیر پیپلز نیشنل الائنس کی آل پارٹیز کانفرنس کا اعلامیہ ۔

1۔ یہ کانفرنس 05 اگست 2019 کو ہندوستان کی جانب سے ریاست جموں کشمیر کو ہند یونین کا جبری طور پر حصہ بنانے اور اس کے بعد مسلسل کرفیو لاک ڈاون سیاسی کارکنوں کی گرفتاریوں کی پرزور مذمت کرتی ہے

2۔ یہ کانفرنس ریاست کے تمام منقسم حصوں بالخصوص گلگت پلتستان میں اسٹیٹ سیبجیکٹ کی بحالی اور غیر قانونی طور پر زمینوں کی الاٹمنٹس کی منسوخی کا مطالبہ کرتی ہے
3۔یہ کانفرنس منقسم ریاست کے تمام قدرتی راستوں کو کھول کر بچھڑے خاندانوں اور باشندگان ریاست کو آزادانہ میل جول کے مواقع فراہم کرنے کا مطالبہ کرتی ہے


4۔یہ کانفرنس گلگت بلتستان کے سیاسی قیدیوں کی رہائی شیڈول فور کے خاتمے اور جی بی و جے کے کے عوامی رابطوں کو سہل بنانے کے لیے شونٹر ٹنل کو فوری طور پر شروع کرنے کا طالبہ کرتی ہے
5۔ مسئلہ ریاست جموں کشمیر کے حل کے لیے مسئلہ کے تاریخی اور قانونی پس منظر کا تقاضا ہے کہ گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر پر مشتمل آئین ساز اسمبلی کا قیام عمل میں لایا جائے پاکستانی عوام ہندوستان کے توسیع پسندانہ عزائم کو ناکام بنانے کے لیے اپنی حکومت اور اداروں پر زور ڈالیں کہ وہ کشمیر کا اسلام آباد میں سفاتخانہ قائم کرنے پر مجبور کرے
6۔ آج کی یہ کانفرنس سیز فائر لائن کو مستقل سرحد بنائے جانے کی سازشوں کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے خبردار کرتی ہے کہ ہندوستانی اقدامات کو مثال بنایا گیا تو سخت مزاحمت کی جائے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں