Advertisements
مقبوضہ کشمیر:مقبول بٹ کے یوم شہادت پر ترہگام کپوارہ میں ریلی کے شرکاءپر فائرنگ، متعدافراد زخمی درجنوں  گرفتار۔ 122

مقبوضہ کشمیر:مقبول بٹ کے یوم شہادت پر ترہگام کپوارہ میں ریلی کے شرکاءپر فائرنگ، متعدافراد زخمی درجنوں  گرفتار۔

سرینگر 11 فروری (جے کے نیوز ٹاکس )

مقبوضہ کشمیر میں شہید جموں کشمیر  مقبول احمد  بٹ کے یوم شہادت پر ان کے آبائی قصبے ترہگام کپواڑہ میں بھارتی فورسز نے احتجاجی مظاہرے پر فائرنگ کرکے متعدد افراد کو زخمی اور کئی دیگر کو گرفتارکیا ہے۔

تفصیلات  کے مطابق لبریشن فرنٹ کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ احتجاجی مظاہرے کی قیادت شہید مقبول بٹ کی والدہ شاہ ہمالی بیگم کررہی تھیں ۔

انہوں نے کہاکہ شہید مقبول بٹ کوخراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ان کے 36ویں یوم شہادت پرآج کنٹرول لائن کے دونوں جانب اور دنیابھر میں احتجاجی مظاہروں ، ریلیوں اورسیمینار ز کا اہتمام کیا جارہا ہے جن میں مقبوضہ علاقے میں کرفیو ہٹانے اور محمد یاسین ملک، فاروق ڈاراور ظہوربٹ سمیت تمام نظربندکشمیریوں کو رہا کرنے کا مطالبہ کیاجارہا ہے۔

ترجمان نے کہاکہ لبریشن فرنٹ کے رہنما ظہوراحمد بٹ نے اپنے ایک پیغام میں مقبول بٹ کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کے قول و فعل میں کوئی تضاد نہیں تھا اور وہ مسلح جدوجہد پر یقین رکھتے تھے کیونکہ بھارت نے مذاکرات کا سہارا لے کر ہمیشہ وقت حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔

ترجمان نے کہاکہ گلگت میں پارٹی رہنما ضیاءالحق اور عمران میر نے مقبول بٹ کے یوم شہادت پر جلسے سے خطاب میں کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں فخر ہے کہ مقبول بٹ کے ساتھ قربانی دینے والے صف اول کے کارکنوں میں شہید اورنگزیب استور گلگت کا باشندہ تھا اور آج اس جدوجہد کو ان کے کارکن آگے بڑھا رہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ گلگت میں شہید مقبول بٹ کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے مختلف مقامات پر متعدد ریلیاں نکالی گئیں۔

ترجمان نے کہاکہ ضلع نیلم،بھمبراورمیر پورآزادی کشمیر میں بھی ریلیوں کا اہتمام کیا گیا اور میرپور میں پارٹی رہنما عبدالحمید بٹ نے ریلی سے خطاب کیا۔انہوں نے کہاکہ آزادکشمیر میں سب سے بڑی تقریب راولاکوٹ میں ہوئی جہاں یکے بعد دیگرے چھ ریلیاں نکالی گئیں جن میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔

انہوں نے کہاکہ برسلزاور برطانیہ میں بھارتی ہائی کمیشن کے سامنے بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں