Advertisements
کشمیر کو بھارتی یونین ٹیرٹری تسلیم کرنے سے انکار | فاروق عبداللہ کا نئے سیاسی اتحاد کا منصوبہ 94

مقبوضہ کشمیر : بھارتی انتظامیہ نے فاروق عبداللہ پر لاگوکالا قانون” پبلک سیفٹی ایکٹ “ کالعدم قرار دیدیا۔

سرینگر 13 مارچ (جے کے نیوز ٹاکس )
مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی انتظامیہ نے سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ اور نیشنل کانفرنس کے سرپرست فاروق عبداللہ پر لاگو کالا قانون ”پبلک سیفٹی ایکٹ“ کالعدم قرار دیدیاہے۔

تفصیلات کے مطابق قابض انتظامیہ نے فاروق عبداللہ کو گزشتہ برس پانچ اگست کو اس وقت نظر بند کر دیاتھا جب بھارتی حکومت نے آئین کی دفعہ 370منسوخ کر کے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر دی تھی۔

بعد ازاں 15ستمبر 2019کو ان پر کالا قانون ”پبلک سیفٹی ایکٹ“لاگو کر دیا گیا تھا ۔
 یاد رہے کہ 83سالہ فاروق عبداللہ سرینگر حلقے سے بھارتی پارلیمنٹ کے رکن بھی ہیں ۔

فاروق عبداللہ کے بیٹے اور سابق وزیر عمر عبداللہ اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی بھی اس وقت مذکورہ کالے قانون کے تحت نظر بند ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں