Advertisements
The position of the Labor Party is the same A lasting solution to the Kashmir dispute is possible only according to the aspirations of the Kashmiris. Care Starmer 158

لیبر پارٹی کا موقف وہی ہے| تنازعہ کشمیر کا پائیدار حل کشمیریوں کے خواہشات کے مطابق ہی ممکن۔ کیئر سٹارمر

کشمیر کے بارے میں لیبر پارٹی کا موقف تبدیل نہیں ہوا ہے ، کیئر سٹارمر 

لندن 11مئی (جے کے نیوز ٹاکس )

برطانوی لیبر پارٹی کے رہنماءکیئر سٹارمرنے وضاحت کی ہے کہ کشمیر کے بارے میں لیبر پارٹی کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے اور پارٹی اب بھی کشمیری عوام کے حق خودارادیت کے بارے میں اقوام متحدہ کی قراردادوں کو تسلیم اور انکی حمایت کرتی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق کشمیر کے بارے میں اپنے گزشتہ بیان پر برٹش مسلم کونسل کی طرف سے ایک سوال کے جواب میں وضاحت دیتے ہوئے کیئر سٹارمر نے کہاکہ تنازعہ کشمیر کا پائیدار حل کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق ہی تلاش کیاجاسکتا ہے ۔

انہوں نے گزشتہ بیان میں کہاتھا کہ کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان ایک دوطرفہ تنازعہ ہے ۔ انہوں نے لندن سے جاری اپنے تازہ بیان میں کشمیری عوام کی خواہشات اوربین الاقوامی قانون اور انسانی حقوق کا احترام کرنے پر زوردیا ۔

انہوں نے بھارت اور پاکستان سے کہاکہ وہ تنازعہ کشمیر کا پائیدار حل تلاش کرنے کیلئے کشمیری عوام کے ساتھ مل کر کام کریں۔

یاد رہے کہ لیبر پارٹی کے نئے قائد کیئر سٹارمر کو بھارتی لابی کے دباو پر بھارت کے زیر قبضہ کشمیر کے حوالے سے پارٹی کا موقف تبدیل کرنے پر لیبر پارٹی کے سپورٹرز اور پارٹی کے برٹش پاکستانی ارکان پارلیمنٹ سمیت پارلیمانی پارٹی کے ارکان کی طرف سے بغاوت کا سامنا ہے۔

برطانوی سیاست میں لیبر پارٹی کی حمایت کرنے والے  برٹش کشمیری  گروپوں نے سٹارمر کی بھارتی لابی گروپ سے ملاقات کے بعد ریاست جموں کشمیر کے تبازعہ کو بھارت اور پاکستان کا دوطرفہ مسئلہ قرار دیئے جانے اور بھارتی آئین میں کی جانے والی حالیہ تبدیلیوں کو بھارت کا اندرونی مسئلہ قرار دیئے جانے پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے اس کی شدید مزمت کی تھی

برطانیہ میں لیبر پارٹی کی سیاسی حمایت کرنے والے کشمیری گروپوں اور مختلف سیاسی جماعتوں اور نظریات سے تعلق رکھنے والے کشمیریوں کا کہنا ہے کہ سٹارمر نے بھارتی لابی گروپ کے دباو میں آ کر کشمیر کو بھارت اور پاکستان کا دو طرفہ مسِئلہ قرار دے کر اور بھارتی آئِین میں کی گئی تبدیلیوں جن کا تعلق براہ راست کشمیر سے ہے پر  ایسا  بیان دے کر لیبر پارٹی کے سابق لیڈر جرمی کوربن سے اپنی راہیں بالکل جدا کر دیں ہیں۔

تاہم برٹش کشمیری گروپوں اور مسلم کونسل کی طرف سے وضاحت طلب کرنے پر سٹارمر نے کہا ہے کہ ہمارے پارٹی موقف میں کسی قسم کی تبدیلی نہیں آئی لیبر پارٹی اب بھی کشمیری عوام کے حق خودارادیت کے بارے میں اقوام متحدہ کی قراردادوں کو نہ صرف تسلیم کرتی ہے بلکہ اس کی مکمل حمایت بھی کرتے ہیں۔ لیبر پارٹی کے نئے قائد کیئر سٹارمر کا کہنا تھا کہ لیبر پارٹی کے متعلق تنازعہ کشمیر کا پائیدار حل صرف وہی ہے جو کشمیری عوام کی خواہشات کا مطابق ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں