Advertisements
417

اہلیان ہل کی حکومت کو یکم جون تک ڈیڈ لائن پیش رفت نہ ہوئی تو احتجاجی تحریک کا آغاز کیا جائے گا:اجلاس کا اعلامیہ ۔

یکم جون کو حکمرانوں کے پتلے نظر آتش جبکہ مزاکرات کے دروازے بند انٹی الیکشن کمپئین کا آغاز کیا جائے گا
علی سوجل(جے کے نیوز ٹاکس )

علی سوجل کے گاؤں ہل میں اہل محلہ کا اجلاس ہوا اجلاس میں اہم فیصلے کئیے گئے تفصیلات کے مطابق اہلیان محلہ نے حکومت کو یکم جون تک ڈیڈ لائن دے دی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا ہمارے بچے قبروستان میں تعلیم حاصل کرنے پہ مجبور ہیں سکول کی بلڈنگ نہیں بارہا یقین دھانیوں کے باوجود سکول کی بلڈنگ تعمیر نہیں ہو سکی آج اکیسویں صدی میں مریضوں کو کندھوں پہ اٹھا کر ہسپتال پہنچایا جاتا ہے سفری سہولیات کے لئیے سڑک نہیں تیس سال سے اہل محلہ سے فراڈ کیا جا رہا ہے 70 گھرانہ ٹرانسفارمر نہ ہونے کی وجہ مشکلات کا شکار ہے جبکہ آج بھی سروں پہ پانی اٹھا کر لانے پہ مجبور ہیں حکومت وقت اور سابقہ حکمرانوں کو یکم جون تک کا وقت ہے اگر اہل محلہ کے مطالبات تسلیم کرتے ہوئے عملی کام نہ ہوا یکم جون کو سابقہ اور موجودہ حکمرانوں ووٹ لینے والوں کے پتلے نظر آتش کرتے ہوئے بھرپور احتجاجی تحریک کا آغاز کیا جائے گا یکم جون کے بعد مزاکرات کے تمام دروزے بند اور الیکشن کا مکمل بائیکاٹ کیا جائے گا کسی امیدوار کو محلے میں مہم کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی عشروں سے محرومیوں کا شکار ہیں سیاسی رہنماء ووٹ لینے کے بعد محلہ ہل کو نظر انداز کرتے آ رہے ہیں محلہ ہل کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک ہو رہا ہے اہل محلہ کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے اب فیصلہ عوامی عدالتوں میں ہونگے اہل محلہ ک مطالبات یکم جون تک تسلیم نہ کئیے گئے تو بھرپور احتجاجی تحریک کا آغاز کیا جائے گا. ان خیالات کا اظہار محلہ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جہانگیر مصری ظہیر ریشم اکرم مختار نوید اصغر و دیگر نے کیا مشترکہ اجلاس میں دو درجن سے زائد لوگ شریک ہوئے باہمی مشاورت سے فیصلہ کیا گیا کے یکم جون سے انٹی الیکشن کمپئین کا آغاز پتلے نظر آتش کرتے ہوئے کیا جائے گا یکم جون کے بعد کسی بھی امیدوار کو محلے میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں