Advertisements
491

قومی مزاحمتی تحریک کو دبانے کے لئے چیئرمین پی این اے کے خلاف سازشیں بند کی جائیں چیئرمین ذولفقار احمد کو دھمکیوں اور ہراساں کرنے کی  مذمت کرتے ہیں۔

دنیا بھر میں موجود قوم پرست اور آزادی پسند ریاستی ہتھکنڈے بے نقاب کریں گے ۔

کیلگری کینیڈا (جے کے نیوز ٹاکس )

آزادی پسند پروگریسو الائنس کے رہنماؤں خضر حیات ، ولید بابر، خورشید ریشم، ماجد اشفاق، پروفیسر سکندر اعظم،  شکیل قمر ،سجاد جان اسد قیوم، سردار نعیم خان اور ساجد اقبال نے اپنے مشترکہ بیان میں چیئرمین جموں کشمیر پیپلز نیشنل الائنس ذولفقار احمد ایڈووکیٹ کو خفیہ ایجنسیوں کی طرف سے جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے اور انہیں ہراساں کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ اگر چیئرمین پی این اے کو کسی طرح کا نقصان پہنچا تو دنیا بھر میں موجود قوم پرست اور آزادی پسند خاموش تماشائی نہیں بیٹھیں گے بلکہ دنیا کے ہر ایوان میں اپنی آواز پونچآ نے کے لئے تمام وسائل بروے کار لائیں گے انہوں نے مزید کہا کہ دنیا بھر میں پھیلے ہوئے ریاست جموں کشمیر کے آزادی پسندوں کو کمزور نہ سمجھا جائے وہ ان مذموم ریاستی عزائم کو دنیا کے ہر دارلحکومت میں بے نقاب کرنے کی صلاعیت رکھتے ہیں ان رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان کی اسٹبلشمنٹ کا یہ وطیرہ ہے کہ وہ عوامی حقوق کی ہر آواز کو دبانے کی کوشش کرتی ہے لیکن آزادی اور عوامی حقوق کی تحریکوں کو وقتی طور پر ریاستی طاقت استمال کر کے دبایا تو جا سکتا ہے لیکن ختم نہیں کیا جا سکتا انہوں نے مزید کہا کہ ذولفقار احمد کی قیادت میں پی این اے نے 5 اگست کے مودی حکومت کے اقدام پر جاندار اور درست موقف اپناتے ہوئے پاکستان سے مظفرآباد کی اسمبلی کو تسلیم کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ خود مختار اسمبلی پوری ریاست کو دوبارہ متحد کرنے اور قومی آزادی کے لئے دنیا کے سامنے مسلہ جموں کشمیر کو ایک قوم کے قومی سوال کے طور پر پیش کر کہ عالمی حمایت حاصل کر سکے چونکہ حکومت پاکستان مظفرآباد اور گلگت بلتستان پر انڈیا کی طرح اپنا قبضہ بر قرار رکھنا چاہتی ہے اس لئے وہ اس طرح کے کسی مطالبے کو برداشت نہیں کر سکتی اور ایسا مطالبہ کرنے والوں کو راستے سے ہٹانے کے لئے اس طرح کے ہتھکنڈے استعمال کیۓ جا رہے ہیں ۔

رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ چیئرمین پی این اے کو دھمکیاں دینے والے عناصر کے خلاف کارروائی کی جاۓ اور ان کی زندگی کا تحفظ یقینی بنایا جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں